ربیع کے چارہ جات کے نقصان رساں کیڑے اور اُن کا انسداد :


گوشوارہ نمبر 5 :

نام کیڑا شناخت طریقہ و وقت نقصان انسداد /تدارک
(1) لشکری سُنڈی پروانہ ہلکے بورے رنگ کا ہوتاہے۔ اگلے پر گہرے بھورے رنگ کے کی لکیروں کا جال ہوتاہے۔ سُنڈی کا رنگ سبزی مائل بھورا اور جسم پر لمبائی کے رخ زرد دھاریاں ہوتی ہیں۔اور سر کے پیچھے گردن پر دو سیاہ دھبے ہوتے ہیں جو اسے امریکن سنڈی سے ممتاز کرتے ہیں۔ ہاتھ لگانے سے فوراً گول ہوکر زمین پر گر جاتی ہے۔ برسیم اور لوسرن وغیرہ کے چارے زیادہ متاثر ہوتے ہیں۔ سُنڈیاں پتوں کو کھا کر چٹ کر جاتی ہیں۔ بیج کے لئے رکھی گئی فصل زیادہ متاثرہوتی ہے۔ برسیم کے علاوہ سبزیات مکئی اوردیگر فصلات پھر بھی حملہ آور ہوتی ہیں۔ شدید حملہ شدہ متاثرہ فصل کو مویشی گھانا پسند نہیں کرتے ۔ چارے والی فصل پر سپرے نہ کی جائے۔ فصل کو جڑی بوٹیوں سے پاک رکھا جائے۔ اگر سُنڈیاں پورے قد کی ہو جائے تو زہر پاشی سے گریز کریں بلکہ اس کی پیوپا کی حالت گزرنے کا انتظا رکیا جائے۔ ٹکڑیوں میں حملہ کی صورت میں پورے کھیت کو سپرے سے اجتناب کریں بلکہ متاثرہ حصوں پر ہی سپرے کریں۔ بہتر ہے کہ چارے کو کاٹ کر بعد میں سپرے کیا جائے۔ روشنی کے پھندے اور جنسی پھندے لگا کر پروانوں کو ہلاک کیا جائے۔ شدید حملہ شدہ کھیتوں کے گرد گہری نالیاں کھود کر پانی سے بھردیں اور اس پر مٹی کا تیل چھڑک دیں تاکہ سُنڈیاں ساتھ والے کھیت میں منتقل نہ ہوسکیں۔ مفید کیڑوں او ر پرندوں کی حوصلہ افزائی کریں۔ حملہ شدہ کھیتوں کے ارد گرد مناسب زہرکا دھوڑا کریں۔ سپرے صبح یا شام کرنا چاہیے تاکہ شہد کی مکھیاں متاثرنہ ہو۔

مکمل پڑھنے کے لئے براہِ مہربانی لاگن کریں

Register