چنے کی فصل کا طریقہ کاشت سال 18-2017


بارانی علاقہ جات

بارانی علاقوں میں ریتلی اور نرم زمین میںپہلے سے محفوظ کردہ وتر میں کاشت بذریعہ ڈرل یا پور کریں۔ تاکہ بیج کی ورئیدگی اچھی ہو۔

قطاروں کا درمیانی فاصلہ 30 سینٹی میڑ (ایک فٹ) اور پودوں کا درمیانی فاصلہ 15 سینٹی میڑ (6 انچ ) ہونا چاہئے۔اگر زمین کی زرخیزی زیادہ ہوتو قطاروں کا درمیانی فاصلہ 45 سینٹی میڑ( ڈیڑھ فٹ) رکھیں۔

اگر کاشت سے پہلے بیج کو 6 سے 8 گھنٹے بھگو کر تھوڑی دیر کے لئے خشک کرکے بوائی کی جائے تو اس کا اگاو بہتر ہوگا۔

آبپاش علاقہ جات :

چنے کی کاشت ریتلی میرا اور اوسط درجہ کی زرخیز زمین میں کریں۔

کاشت بذریعہ ڈرل یا پور کریں تاکہ روئیدگی اچھی ہو۔

قطاروں کا درمیانی فاصلہ ( ایک فٹ) جبکہ میرا زمینوں اور زیادہ بارش والے علاقوں میں قطاروں کا درمیانی فاصلہ 45 سینٹی میڑ ( ڈیڑھ فٹ) اور پودوں کا درمیانی فاصلہ 15 سینٹی میڑ (6 انچ) ہونا چاہئے۔

ستمبر کاشتہ کماد میں چنے کی مخلوط کاشت:

ستمبر کاشتہ کماد میں کابلی چنے کی مخلوط کاشت کامیاب ثابت ہوئی ہے۔

چار فٹ کے فاصلے پر کاشتہ کماد میں بیڈ کے درمیان چنے کی دولائنیں کاشت کریں۔

جبکہ دو تا اڑھائی فٹ کے فاصلے پر کاشتہ کماد میں چنے کی ایک لائن کاشت کریں۔

اس طریقہ کاشت میں بیج کی مقدار 15 سے 20 کلو گرام فی ایکڑ استعمال کریں۔

جس جگہ پر پہلی مرتبہ چنے کی فصل کاشت کی جارہی ہو وہاں بیج کو جراثیم ٹیکہ لگانے کے بعد کاشت کرنے سے پودے کی ہواسے نائٹروجن حاصل کرنے کی صلاحیت بڑھ جاتی ہے اور زیادہ پیداوار حاصل ہوتی ہے۔