شوگرایڈوائزری بورڈ، خام چینی پراسیس کرکے چین کوبرآمدپرغور


وزیراعظم کے مشیر برائے صنعت وتجارت عبدالرزاق داؤد کی زیر صدارت شوگر ایڈوائزری بورڈ کا اجلاس ہوا جس میں ملک میں چینی کے ذخائر اور قیمت پر تبادلہ خیا ل کیا گیا۔ ایڈوائزری بورڈ نے چین سے خام چینی پراسیس کرکے برآمد کرنے پر بھی غور کیا ۔مشیر تجارت نے کہا عوام کو مناسب داموں چینی کی دستیابی ترجیح ہے ،ملک میں چینی کے وافر ذخائر سے قیمتوں میں استحکام کو یقینی بنایا جارہا ہے ، کسانوں کو مکمل ادائیگی یقینی بنائی جائے ۔ مشیر تجارت نے کہا کہ افریقہ اور افغانستان چینی کی بڑی درآمدی منڈیاں ہیں جہاں اضافی چینی ایکسپورٹ کی جاسکتی ہے ۔ اجلاس میں شوگر ملز مالکان کی شرح منافع کے علاوہ نئی شوگر پالیسی پر بھی بات چیت ہوئی ۔ادھرمشیر تجارت سے اپٹما وفد نے بھی ملاقات کی جس میں ٹیکسٹائل ایکسپورٹرز کے لیکوڈٹی کے مسائل کے حل پر بات چیت کی گئی ۔ مشیر تجارت نے کہاکہ لیکوڈٹی کے مسائل کے حل کے لیے مختلف ٹیکسٹائل پالیسی اسکیموں کے تحت جلد فنڈ جاری کیے جائیں گے ۔انہوں نے کہاکہ ٹیکسٹائل خصوصاً ایس ایم ایز سیکٹر کے لیے فنانس تک رسائی اور ویلیو ایڈیشن کے لیے مراعات پر بات چیت ہوئی ۔