معمولی بارش سے بجلی غائب، رات دن آنکھ مچولی، شہری پریشان، کے الیکٹرک انتظامیہ نے خاموشی اختیار کرلی


کراچی میں معمولی بارش سے بجلی غائب، رات دن آنکھ مچولی، شہری پریشان، کے الیکٹرک انتظامیہ بجلی کی ترسیل معمول پر نہ لاسکی، کاروباری مراکز، دفاتر، اسپتال، تعلیمی ادارے بھی متاثر رہے،دوسری جانب کے الیکٹرک انتظامیہ نےخاموش اختیار کرلی۔کے الیکٹرک نے دعویٰ کیا ہے کہ ایکسٹرا ہائی ٹینشن لائن میں ٹرپننگ سے بھی بجلی متاثر ہوئی، دن بھربعض علاقوں میں بجلی کی آنکھ مچولی جاری رہی ،کے الیکٹرک بجلی کی فراہمی معمول پر لانے میں مکمل ناکام رہی حبس اور گرمی میں بجلی کی بندش نے لوگوں کا جینادوبھر کردیا صارفین کا کہنا تھا کہ کے الیکٹرک کے اس دعوے کہ سسٹم کو اپ گریڈ کرنے کیلئے ادارے نے بڑی سرمایہ کاری کی ہے اس کا عملی حال یہ ہے کہ چند بوندیں پڑنے پر شہر کا آدھے سے زیادہ علاقہ بجلی سے محروم ہوگیا، بعض آبادیوں میں بجلی بحال نہ ہونے پر لوگوں نے گزشتہ رات جاگ اور بجلی بحال ہونے کی امید پر گزاردی ۔منگل کو بھی متعدد علاقوں کے صارفین پریشان رہے لیکن کے الیکٹرک بجلی ترسیل کو معمول پر نہ لاسکی وولٹیج کی کمی بیشی نے بھی لوگوں کو پریشان رکھا اس صورتحال پر صارفین نے شدیدغم وغصے کا اظہار کرتے ہوئے سپریم کورٹ آف پاکستان ، وفاقی حکومت اور نیپرا سے فوری نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے کاروباری مراکز،