صنعتی آرڈرز کی بحالی کیلئے شناختی کارڈ کی شرط مؤخر کی جائے : اپٹما


آل پاکستان ٹیکسٹائل ملز ایسوسی ایشن کے عہدیداروں نے کہا ہے کہ تاجروں کے تحفظات دور کیے جائیں ،ملکی صنعتیں بند ہورہی ہیں، مقامی مارکیٹ سے نئے آرڈرز ملنا بند ہو گئے ہیں، حالات یہی رہے تو صنعتیں خودبخود بند ہوجائیں گی۔ عہدیداروں نے شناختی کارڈ کی شرط مؤخر کرکے آسان اور قابل عمل فکس ٹیکس کا نظام وضع کرنے کا مطالبہ کیاتاکہ صنعتی آرڈرز بحال ہوسکیں ۔گزشتہ روز اپٹماہاؤس میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے مرکزی چیئرمین آل پاکستان ٹیکسٹائل ملز ایسوسی ایشن سید علی احسان نے کہاکہ ٹیکسٹائل کی صنعت اس وقت غیر یقینی صورتحال کا شکار ہے ، بجٹ کے بعد مارکیٹوں میں حالات غیر مستحکم ہیں ،نئے آرڈرز نہ ملنے کے باعث ملوں کے گودام بھر چکے ہیں ،ملیں بند ہورہی ہیں ۔قائم مقام چیئر مین اپٹما پنجاب عا مر شیخ نے کہاکہ پہلے مرحلے میں ساڑھے 7 فیصد ٹیکس وصول کریں تاکہ صنعتی پہیہ چلتا رہے ۔ گروپ لیڈر اپٹما گوہر اعجاز نے کہا کہ ہم صنعتکار ہیں تاجر نہیں،جس نے ہم سے مال خریدنا ہے وہ شناختی کارڈ کی شرط پر مال نہیں خرید رہا ، نظام کیسے چلے گا ،ملکی صنعتوں سے کو ئی مال خریدنے کو تیار نہیں ۔