ٹیکسٹائل مصنوعات کو عالمی مارکیٹ میں سخت مسابقت کا سامنا


زائد پیداواری لاگت کے باعث بنگلہ دیش،کمبوڈیا جیسے ممالک بھی ٹف ٹائم دے رہے ہیں

پاکستان کی بر آمدات میں نمایاں حصہ رکھنے والے ٹیکسٹائل سیکٹر کو عالمی مارکیٹ میں کم پیداواری لاگت والے ممالک سے سخت مسابقت کا سامنا ہے جس میں بنگلہ دیش او ر کمبوڈیا جیسے ممالک بھی شامل ہیں۔تفصیلات کے مطابق مالی سال2019میں ملکی ٹیکسٹائل شعبے کی کارکردگی پست رہی ہے ۔ مالی سال 2019کی پہلی ششماہی میں ٹیکسٹائل کے شعبے کی پیداوار 0.2فیصد تک کم ہوئی۔ پاکستا نی ٹیکسٹائل مصنوعات کو زائد پیداواری لاگت کے باعث عالمی مارکیٹ میں کم پیداواری ممالک سے سخت مسابقت کا سامنا ہے ۔بنگلہ دیش اور کمبوڈیا جیسے کم پیداواری لاگت کے حامل ممالک بھی عالمی مارکیٹ میں پاکستانی ٹیکسٹائل مصنوعات کو انتہائی سخت وقت دے رہے ہیں۔عالمی مارکیٹ میں اسی مسابقت کے باعث پاکستان میں تیار اور بنے ہوئے ملبوسات انتہائی کم بر آمدی قیمتوں میں فروخت ہوتے ہیں اور نتیجے میں ٹیکسٹائل ملز مالکان کیلئے پیداواری لاگت نکالنا بھی مشکل ہوجاتا ہے ۔دوسری جانب کپاس کی پیداوار میں نمایاں کمی کے باعث ٹیکسٹائل مصنوعات کی بر آمدات میں اضافہ اور زیادہ دشوار دکھائی دیتا ہے ۔