ڈویژن بھر میں چکن، چھوٹے و بڑے گوشت کی مہنگے داموں فروخت عروج پر پہنچ گئی


پرائس کنٹرول کمیٹیوں کے تمام تر دعوئوں کے برعکس ڈویژن بھر کے اضلاع فیصل آباد ، جھنگ ، ٹوبہ ٹیک سنگھ ، چنیوٹ میں ناجائز منافع خور قصابوں نے اندھیر مچا دیا ہے اور ڈسٹرکٹ پرائس کنٹرول کمیٹیوں کے مقرر کردہ نرخوں سے کہیں زیادہ ریٹس وصول کر کے بلیک میں گوشت کی فروخت جاری ہے نیز اس سلسلہ میں جاری کی گئی پرائس کنٹرول لسٹوں پر بھی عملدر آمد نہ کیا جا رہا ہے۔

انجمن تحفظ حقوق صارفین فیصل آباد ڈویژن کے ترجمان چوہدری فرید احمد نے بتا یا کہ ڈویژن کے مختلف مقامات پر دیسی و برائلر مرغی ، بڑے و چھوٹے گوشت کے نرخ مقرر کئے گئے ہیں لیکن ریٹ لسٹوں کے برعکس زائد قیمت پر گوشت فروخت کیاجارہاہے ۔ انہوںنے کہاکہ اگر مقررہ نرخوں پر گوشت فراہم کرنے پر اصرار کیاجائے تو صارفین کو انتہائی ناقص گوشت تھما دیا جاتا ہے۔

انہوںنے کہاکہ انتظامی حکام اور پرائس کنٹرول کمیٹیوں کے ارکان زبانی جمع خرچ میں مصروف ہیں جبکہ عملی طور پر صارفین کو ناجائز منافع خور مافیا کے رحم و کرم پر چھوڑدیاگیاہے۔ انہوںنے کہاکہ جو شخص روزانہ ہزاروں روپے کی ناجائز منافع خوری کرتاہے اسے دو چارسو روپے جرمانہ کرکے چھوڑ دیا جاتاہے جس کے بعد وہ پہلے سے بھی زیادہ ڈھٹائی کے ساتھ اپنا ناجائز دھندا شروع کردیتاہے۔انہوںنے ناجائز منافع خوروں کو فوری طور پر گرفتار کر کے کم ازکم ایک ماہ کیلئے جیل بھیجنے کا بھی مطالبہ کیاہے تاکہ ناجائز منافع خور مافیا کی حوصلہ شکنی یقینی ہو سکے۔