جھڈو :گندم کی پیداوار شروع ہونے کے باوجود آٹا بدستور مہنگا


ذخیرہ اندوز سرگرم،1600روپے فی من میں آٹا فروخت ،عوام شدید پریشان

جھڈو میں گندم کی پیداوار شروع ہونے کے باوجود آٹا 1600روپے فی من کے حساب سے فروخت ہورہا ہے جس سے عوام شدیدپریشان ہیں۔ گندم کی سرکاری خریداری بھی شروع نہیں ہو سکی ہے ،بیوپاری اور چکی مالکان نے گندم 1200روپے فی من کے حساب سے خرید کر ذخیرہ کرنا شروع کر دیا ۔ تفصیلات کے مطابق جھڈو سمیت دیگر علاقوں میں گندم کی اگیتی فصل کی محدود پیداوار فروری کے وسط سے شروع ہو گئی تھی جس میں اب اضافہ ہو گیا ہے لیکن گندم کی سرکاری خریداری تا حال شروع نہیں ہو سکی۔ ذرائع کے مطابق گندم کی سرکاری خریداری یکم اپریل سے شروع ہونے کا امکان ہے ۔سرکاری خریداری میں تاخیر کے باعث آبادگار انتہائی کم نرخوں پر اپنی گندم فروخت کرنے پر مجبور ہو گئے ہیں۔