اڑھائی لاکھ ٹن گندم کی برآمد،متوقع بولیاں نہ لگ سکیں


محکمہ خوراک کی جانب سے اڑھائی لاکھ ٹن گندم برآمد کیلئے متوقع رقم پر بولیاں نہ لگ سکیں، گزشتہ روز ڈائریکٹر خوراک کے دفتر میں مجموعی طورپر 12 بولی دہندگان نے حصہ لیا ، جن میں سب سے زیادہ بولی 30 ہزار 666 روپے فی ٹن کی لگائی گئی ، جو عالمی منڈی میں گندم کی تقریباً240 ڈالر فی ٹن قیمت اور پاسکو کی 233 ڈالر کے مقابلے میں 219 ڈالر بنتی ہے ، جبکہ سب سے زیادہ بولی بھی صرف 25 ہزار ٹن کیلئے لگائی گئی ہے ، دیگر 11 بولی دہندگان نے گندم کی برآمد کیلئے مجموعی طور پر 5 لاکھ 25 ہزار ٹن کی بولیاں لگائی ہیں تاہم اس میں اوسط پیشکش تقریباً 28 ہزار روپے فی میٹرک ٹن یعنی 200 ڈالر کے قریب رہی، جو پاسکو کی ایک لاکھ ٹن ایکسپورٹ کیلئے کھولے گئے ٹینڈرز سے 33 ڈالر تک کم ہے ،پاکستان فلور ملز ایسوسی ایشن کے سابق چیئرمین خلیق ارشد نے بتایا کہ پاسکو کی جانب سے ایک لاکھ ٹن گندم برآمد کیلئے 233 ڈالر کے بنچ مارک کے بعد محکمہ خوراک کیلئے وصول شدہ بولیوں کے مطابق ٹینڈر دینا مشکل مرحلہ نظر آ رہا ہے ، کیونکہ اس وقت فلور ملوں کو سرکاری گندم کے اجرا میں بھی تیزی دیکھی جا رہی ہے جبکہ اس گندم کی قیمت بھی برآمد کیلئے موصول شدہ بولی سے زیادہ ہے ۔