شوگر ملز کا گنے کے نرخ 182روپے من ادا کرنے سے انکار


حکومتی احکامات نظر انداز ، 140 روپے من ادائیگی شروع ،بقایاجات بھی ادا نہیں کیے

شوگر ملز مالکان نے سندھ حکومت کے احکام ردی کی ٹوکری میں پھینکتے ہوئے کاشت کاروں کوگنے کے نرخ182 روپے فی من ادا کر نے سے انکار کر دیا ہے اور140 روپے من کے حساب سے ادائیگی شروع کر دی ہے جس پر کاشت کار سراپا احتجاج بن گئے ہیں ۔تفصیلات کے مطابق سندھ میں ہرسال کی طرح شوگر ملز مالکان اور کاشتکاروں کے مابین گنے کے ریٹ کا تنازع جاری ہے ،ریٹ کے تنازع کے باعث تحصیل شاہ بندر میں گنے کی کٹائی کاشتکاروں نے احتجاجاً بند کی ہوئی ہے جس کے سبب گنا کمزور اور خشک ہونے لگا ہے ،ملز مالکان نے شاہ بندر کے کاشتکا روں کی10کروڑ سے زائد کی بقایاجات بھی ادا نہیں کی،ضلع کی 3 میں سے ایک شوگرمل تاحال بندہے ۔ آبادگار رہنماؤں کا کہنا ہے کہ حکومتی رٹ ناکام ہونے کے باعث 130 اور 140 فی من گنا خریدا جارہا ہے جس سے کاشتکاروں کو کروڑوں کا نقصان ہوگا ۔ انہوں نے چیف جسٹس اور وزیر اعظم سے فوری نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے ۔