دوسو پچاس 250ارب کی ذخیرہ گندم خزا نے پر بوجھ:ایران پاک فیڈریشن


تین 3سال سے پڑی 65لاکھ ٹن گندم فوری طور پر فلور ملوں کوسستے داموں فراہم کی جائے

ایران پاک فیڈریشن آف کلچر اینڈ ٹریڈ کے صدر خواجہ حبیب الرحمان نے کہا ہے کہ محکمہ خوراک ہر سال ذاتی مفادات کیلئے لاکھوں ٹن زائدگندم کی خریداری کر کے قومی خزانے پر اربوں روپے کا بوجھ ڈال دیتا ہے جس کو روکنے کیلئے اب عملی اقدامات کر نے کاوقت آ گیا ہے ، محکمہ خوراک کی غفلت سے 250ارب مالیت کی65 لاکھ میٹرک ٹن گندم خزانے پر بوجھ ہے کیونکہ خرانے سے اربوں روپے کا سود بھی جا چکا ہے اور یہ بڑھتا جا رہا ہے ۔اتوار کو ان خیالات کا اظہار انہوں نے خواجہ ضیا الرحمن کی قیادت میں فلور ملزایسوسی ایشن کے وفد سے گفتگوکرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ سٹاک میں پڑی گندم فوری طور پر ملوں کو ایک ہزار روپے من کے حساب سے فراہم کی جائے تاکہ شہریوں کوسستا آ ٹا بھی مل سکے اور اربوں روپے کا ریونیو بھی خزانے میں جمع ہو سکے ۔انہوں نے کہا کہ ایک طرف توصو بائی وزیر خوراک شہریوں کو ملاوٹ سے پاک اشیا کی فراہمی کی بات کر رہے ہیں تو دوسری طرف اربوں روپے کی گندم گوداموں میں پڑی خراب ہو رہی ہے جس کا فوری نوٹس لیا جا نا چاہیے ۔