ٹیکس ایمنسٹی اسکیم سے 89ارب روپے وصول ہوئے ،وزیرخزانہ


نگران وزیر خزانہ ڈاکٹر شمشاد اختر نے انکشاف کیا ہے کہ ٹیکس ایمنسٹی اسکیم سے 89 ارب روپے کا ٹیکس حاصل ہوا ہے ، اس اسکیم سے پتہ چلا ہے کہ اتنی رقم تھی جو ہمیں نہیں مل رہی تھی،یہاں وزارت منصوبہ بندی کے زیر اہتمام پائیدار ترقی کے اہداف کے حصول کے موضوع پر پہلی قومی کانفرنس کا انعقاد وزارت کے ایس ڈی جیز سپورٹ یونٹ کے تحت اسلام آباد کے ایک مقامی ہوٹل میں کیا گیا، اس کانفرنس کی مہمان خصوصی نگران وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی ڈاکٹر شمشاد اختر جبکہ اس کی صدارت سیکریٹری وزارت منصوبہ بندی شعیب احمد صدیقی نے کی، نجی شعبے سے تعلق رکھنے والی اہم شخصیات، تھنک ٹینکس کے سربراہان، اقوام متحدہ کے ادارے برائے ترقی اور معاشیات و دیگر شعبہ ہائے زندگی سے وابستہ دو سو سے زائد ممتاز شخصیات اور ماہرین نے کانفرنس میں شرکت کی، اپنے افتتاحی خطاب میں وفاقی وزیر ڈاکٹر شمشاد اختر نے کہا کہ پاکستان میں بجٹ خسارہ اور کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ ہدف سے زیادہ ہے، ایسے حالات میں پائیدار ترقی کے اہداف کیلئے وسائل کی فراہمی آسان کام نہیں ہے ، پلاننگ کمیشن کو ایس ڈی جیز کے تمام اعشاریوں کے حوالے سے ترجیحات مقرر کرنی چاہئیں،ڈاکٹر شمشاد اختر نے کہا کہ پاکستان میں ترقی کے پائیدار اہداف کے حصول کے حوالے سے گزشتہ تین سال کے دوران نہایت مثبت پیش رفت ہوئی جو کہ قابل تحسین عمل ہے ۔ حکومت کو معاشی شعبے میں کئی چیلنجز کا سامنا ہے ۔