ملکی کرنسی زوال پذیر,انڑ بینک میں ڈالے 120 روپے کی سطح عبور کرگیا


انٹر بینک اور اوپن مارکیٹ میں پا کستانی رو پیہ ڈالر کے سامنے شدیدد باؤ کا شکا ر ہے ، انٹر بینک میں ڈالرروپے کی قدر کو مزید گرا کرتاریخ میں پہلی مرتبہ 120روپے کی بلندسطح عبور کرگیاجبکہ اوپن مارکیٹ میں 122روپے کی سطح پر پہنچے میں صرف 30 پیسے کی دوری پر ہے ،دوسری جانب روپے کے مقابلے میں ڈالر کی قدر کو کنٹرول میں رکھنے کیلئے اسٹیٹ بینک آف پاکستان کی مداخلت بھی کام نہ آ سکی جبکہ عوام مہنگے داموں ڈالر خریدنے پر مجبور ہیں،فاریکس ایسوسی ایشن آف پاکستان کی رپورٹ کے مطابق انٹر بینک میں روپے کے مقابلے میں ڈالر کی قدر میں55پیسے کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا جس سے ڈالر کی قیمت خرید 119.75 روپے سے بڑھ کر 120.30 روپے اور فروخت 119.85 روپے سے بڑھ کر120.40روپے پر جاپہنچی، اسی طرح 20پیسے کے اضافے سے اوپن کرنسی مارکیٹ میں ڈالر کی قدر20پیسے بڑھ گئی جس سے ڈالر کی قیمت خرید 121روپے سے بڑھ کر121.20روپے اور قیمت فروخت 121.50روپے سے بڑھ کر 121.70 روپے ہو گئی،رپورٹ کے مطابق یورو کی قیمت خرید 140.50 روپے اور فروخت 142.50 روپے پر برقرار رہی جبکہ 70 پیسے کی کمی سے برطانوی پاؤنڈ کی قیمت خرید 160.50 روپے سے گھٹ کر 159.80 روپے اور فروخت 162.50روپے سے گھٹ کر 161.80 روپے پر آگئی ، ڈیلرز کے مطابق امپورٹرز کی جانب سے ڈالر کی مانگ میں اضافے کے باعث روپیہ مسلسل کمزور ہورہا ہے ، اقتصادی ماہرین کا کہنا ہے کہ حکومت نے ایکسپورٹس بڑھانے اور تجارتی پالیسی کی سمت درست کرنے کے اقدامات نہ لیے تو روپیہ اپنی قدر گنواتا رہے گا،واضح رہے کہ رواں مالی سال کے دوران ڈالر14 فیصد تک مہنگا ہوچکا ہے ۔