گندم کی ریکارڈ برآمدات, اپریل میں حجم 3 لاکھ ٹن سے تجاوز کر گیا


مئی کے آخر تک 14لاکھ ٹن کا برآمدی ہدف حاصل کرلیا جائے گا،چیئرمین قائمہ کمیٹی برآمدات، ایف پی سی سی آئی

اپریل 2018 کے دوران گندم کی برآمدات میں ریکارڈ اضافے سے برآمدات کا حجم 3لاکھ ٹن سے بڑھ گیا ہے جو ملکی تاریخ میں ایک ماہ کے دوران کی جانے والی گندم کی سب سے زیادہ برآمدات ہیں ،جمعرات کو وفاق ایوان ہائے صنعت وتجارت پاکستان (ایف پی سی سی آئی)کی قائمہ کمیٹی برائے برآمدات میں بتایا گیا کہ رواں مالی سال کے اختتام تک سمندر کے ذریعے گندم کا برآمدی ہدف14لاکھ ٹن حاصل کرلیا جائیگا،برآمد کنندگان کے اقدامات سے مارچ2018 کے دوران سمندری راستے سے 2 لاکھ 41 ہزار522 میٹرک ٹن گندم برآمد کی گئی ہے جس کی مالیت 4کروڑ 70لاکھ ڈالر سے زائد رہی ہے جبکہ اپریل کے دوران برآمدات 3 لاکھ ٹن سے تجاوز کرگئیں،انہوں نے کہا کہ دسمبر 2017ء میں حکومت نے گندم اور اس کی مصنوعات کی برآمدات کیلئے 2کروڑ 30لاکھ ٹن کا ہدف مقرر کیا تھا تاکہ ملک میں موجود گندم کے اضافی ذخیرہ کو برآمد کرکے قیمتی زرمبادلہ کمایا جاسکے ،چیئرمین قائمہ کمیٹی نے کہاکہ مئی2018ء کے آخرتک 14لاکھ ٹن گندم کا برآمدی ہدف حاصل کرلیا جائیگا،جو ملکی تاریخ میں ایک نیا ریکارڈ ہوگا،بنگلہ دیش،انڈونیشیا، ویتنام ، دبئی اورعمان سمیت مختلف ممالک کو گندم برآمد کی جارہی ہے ۔