حکومت 15 لاکھ ٹن چینی برآمد کرنے کی اجازت دے شوگر ملز


رواں مالی سال کے پہلے 3ماہ میں 92ہزار ٹن چینی کی برآمد سے 4.20کروڑ ڈالر کا زرمبادلہ حاصل ہوا،کوٹہ بڑھایا جائے آئندہ سیزن 80 لاکھ ٹن پیداوار کا امکان ،55لاکھ ملکی ضرورت،کوٹے میں اضافے سے کاشتکاروں کی ادائیگیوں میں آسانی ہوگی، ایسوسی ایشن

رواں مالی سال کے پہلے 3ماہ کے دوران جولائی سے ستمبر کے دوران تقریباً 92 ہزار ٹن چینی برآمد ہوئی جبکہ آل پاکستان شوگر ملز ایسوسی ایشن نے برآمدی کوٹے میں مزید اضافے کا مطالبہ کر دیا ، رواں مالی سال کے پہلے 3 ماہ میں 92لاکھ ٹن چینی برآمد کی گئی ، چینی کی برآمدات سے 4کروڑ 20لاکھ ڈالر کی آمدن ہوئی ، آئندہ کرشنگ سیزن میں ملک میں چینی کی 80لاکھ ٹن ریکارڈ پیداوار متوقع ہے ۔ پاکستان شوگر ملز ایسوسی ایشن کے مطابق 80لاکھ ٹن میں سے 55لاکھ ٹن ملکی ضروریات ہے جبکہ 5لاکھ ٹن گزشتہ برس کے ا سٹاک بھی موجود ہیں ، اس طرح ملک میں 30 لاکھ ٹن اضافی چینی موجود ہوگی ۔ شوگر ملز نے یہ مؤقف اختیار کیا ہے کہ کاشتکاروں کو بروقت ادائیگیوں کیلئے ضروری ہے کہ حکومت فوری طور پر 15لاکھ ٹن چینی کی برآمدات کی اجازت دے جبکہ بقیہ 15لاکھ ٹن چینی ٹریڈ کارپوریشن آف پاکستان خریدے تاکہ ملک میں چینی کی قیمت میں استحکام رکھا جاسکے ۔