گذشتہ پانچ سال کے دوران گنے کے زیرکاشت رقبہ میں 7 فیصد اور پیداوار میں 15 فیصد کا اضافہ


گذشتہ پانچ سال کے دوران گنے کے زیرکاشت رقبہ میں 7 فیصد جبکہ پیداوار میں 15 فیصد کا اضافہ ہوا ہے جس کے باعث چینی کی پیداوار ملکی ضروریات سے تجاوز کر چکی ہے۔ پاکستان شوگر ملز ایسوسی ایشن (پی ایس ایم ای) کی رپورٹ کے مطابق ملک میں چینی کی ملکی طلب کی تکمیل کے بعد ایسوسی ایشن کی رکن صنعتوں کے پاس موجود سٹاک کا 55 فیصد حصہ مقامی ضرورت سے زائد ہے جس کو برآمد کرکے نہ صرف قیمتی زرمبادلہ کمایا جا سکتا ہے بلکہ اس سے گنے کی کرشنگ کے آئندہ سیزن کے لئے شوگر ملز کی کیش ضروریات بھی پوری کی جا سکتی ہیں۔ ایسوسی ایشن کے حکام نے کہا ہے کہ چینی کی عالمی اور ملکی قیمتوں میں فرق کے باعث حکومتی سرپرستی کی ضرورت ہے جس کے لئے جامع پالیسی کے تحت اقدامات کرنے ہوں گے تاکہ کرشنگ کے آئندہ سیزن کے دوران کاشتکاروں کو گنے کی صحیح قیمت کی ادائیگی کو یقینی بنایا جا سکے۔