چینی کی بر آمد سے قیمتوں میں اضافہ نہیں ہوگا،ترجمان


اضافی چینی کی برآمد کے بعد ہی کاشتکاروں کو ادائیگی کرنے کے قابل ہوسکیں گے تیاری میں80فیصد لاگت کاشتکاروں کو ادا کی جانے والی رقم ہوتی ہے ،شوگر ملز ایسوسی ایشن
پاکستان شوگر ملز ایسوسی ایشن کے ترجمان نے پاکستان بسکٹ اینڈ کنفیکشنری مینو  فیکچررز ایسوسی ایشن کے اس بیان کی شدید مذمت کی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ شوگر ملز مالکان حکومت سے چینی کی برآمد کی اجازت کے خواہاں ہیں۔ترجمان شوگر ملز ایسوسی ایشن کے مطابق ہم نے محض اضافی چینی کی برآمد کی بات کی ہے جس سے چینی استعمال کرنے والی صنعتیں اور گھریلو صارفین ہر گز متاثر نہیں ہونگے ۔ترجمان کا کہنا تھا کہ شوگر ملز کو گنے کے کاشتکاروں کو ادائیگیاں کرنا ہیں اور اضافی چینی کی برآمد کے بعد ہی شوگر ملز مالکان کاشتکاروں کو ادائیگی کرنے کے قابل ہوسکیں گے ۔ترجمان کا مزید کہنا تھا کہ چینی کی تیاری میں 80 فیصد لاگت کاشتکاروں کو ادا کی جانے والی رقم ہوتی ہے ۔ ترجمان نے واضح کیا کہ اضافی چینی کی بر آمد سے نہ تو مقامی سطح پر چینی کی قلت پیدا ہوگی اور نہ ہی قیمتوں میں اضافہ ہوگا۔