حکومت چینی برآمد کرنے کی اجازت دینے سے گریز کرے ،کراچی چیمبر


مقامی مارکیٹوں میں چینی کی قیمت بین الاقوامی منڈیوں کے مقابلے میں زیادہ ہے قیمتوں میں مزید اضافہ ہوگا ،عام آدمی پر اضافی بوجھ پڑے گا ،صدر شمیم احمد فرپو
کراچی چیمبرکے صدر شمیم احمد فرپو نے حکومت پر زور دیا کہ وہ چینی کی برآمدات کی اجازت دینے سے مکمل طور پر گریزکرے کیونکہ اگر ایسا ہوا تو اس کے نتیجے میں مقامی مارکیٹوں میں چینی کی قیمتوں میں بے پناہ اضافہ ہوگا جس سے نہ صرف عام آدمی پر اضافی بوجھ پڑے گا بلکہ کئی متعلقہ صنعتیں بھی بری طرح متاثر ہوں گی، بالخصوص ایسے وقت میں جب رمضان کا مقدس مہینہ صرف دو ماہ کے فاصلے پر ہے ۔ گزشتہ روز چیمبر سے جاری ایک بیان میں صدر نے خبردار کیا کہ ماہ رمضان میں ملک بھر میں چینی کی کھپت اونچی سطح پر ہوتی ہے ،لہٰذا چینی کو برآمد کرنے کے کسی بھی اقدام کی صورت میں مقامی مارکیٹوں میں اس کی قیمتوں میں اضافہ ہوگا اور ہر کسی کیلئے مشکلات پیدا ہونگی ۔ا نہوں نے کہا کہ ملک سے چینی کو برآمد کرنے کا یہ ہر گز مناسب وقت نہیں کیونکہ مقامی مارکیٹوں میں چینی کی قیمت بین الاقوامی منڈیوں کے مقابلے میں زیادہ ہے اور ایسا محسوس ہورہا ہے کہ چینی بنانے والے مقامی مارکیٹوں میں بھی اس کی قیمتوں کو بڑھانے کی کوششوں میں لگے ہوئے ہیں تاکہ زیادہ منافع کمایا جاسکے ۔